کبھی کبھی میرے دل میں خیال آتا ہے


کبھی کبھی میرے دل میں خیال آتا ہے خدانخواستہ تیرے ساتھ گزرنے پاتی تو زندگی برباد ہو بھی سکتی تھی مستقل افتاد ہو بھی سکتی تھی صد شکر یہ نہ ہو سکا اور اب یہ عالم ہے الحمدللہ تو نہیں ترا غم، تری جستجو بھی نہیں کبھی کبھی مرے دل میں خیال آتا ہے

Advertisements

نیم سرکاری افسر


 نوکریوں کے معاملے میں الحمدللّٰہ ہم قسمت کے دھنی واقع ہوئے ہیں۔ نوکریاں تو ماشااللّہ ہم ایسے بدلتے ہیں جیسے سیاستدان پارٹیاں اور ہیرونیں شوہر بدلتی ہیں۔البتہ  اتنی مروت  ضرور کرتے ہیں  کہ: جو دل پہ گزرتی رہی رقم کرتے رہے وہ کماتے رہے، ہم فقط گنتے رہے چاہے وہ ایک وڈے صاحب سے مڈبھیڑ کے قصے …